کورونا کے باعث لعل شہباز قلندر کا عرس منسوخ، زائرین میں غم وغصہ، مرکزی گیٹ توڑ دیا

سیہون شریفم میں کورونا وائرس کے باعث بند لعل شہباز قلندر مزار کا مرکزی گیٹ زائرین نے توڑ دیا۔ سیکیورٹی پوائنٹ سے مزار کے اندر داخل ہونے کی کوشش، پتھراؤ، 5 پولیس اہلکار زخمی، 5 موٹرسائیکلیں نظر آتش، صورتحال کشیدہ۔ پولیس کی مزید نفری طلب کر لی گئی

حضرت لعل شہباز قلندر کا 769واں عرس کورونا وائرس کے باعث منسوخ ہونے کے باوجود پنجاب سمیت ملک بھر سے بڑی تعداد میں زائرین سیہون پہنچے تھے۔

زائرین مزار کا گیٹ بند ہونے پر مشتعل ہو گئے، انہوں نے اینٹیں اور ڈنڈے مار مار مزار کا مرکزی گیٹ توڑ دیا اور سیکیورٹی پوائنٹ پر پہنچ گئے۔

مشتعل زائرین نے مزار کے اندر داخل ہونے کی کوشش کی تو پولیس اہلکاروں اور موقع پر موجود سیکیورٹی گارڈز نے انھیں روکا، غصے میں بپھرے لوگوں نے انھیں اینٹیں اور پتھر مارنا شروع کر دیئے۔

اس لڑائی میں متعد پولیس اہلکاروں اور زائرین کے شدید زخمی ہونے کی اطلاعات ہیں۔ زخمیوں کو طبی امداد کیلئے سید عبداللہ شاہ انسٹیٹیوٹ ہسپتال منتقل کر دیا گیا ہے۔

واقعے کے بعد سیہون مزار کے گردونواح میں حالات کشیدہ ہو گئے ہیں۔ پولیس کی بھاری نفری نے مزار پر پہنچ کر زائرین کو باہر نکالا اور صورتحال کو کنٹرول کرنے کی کوشش کی تاہم دوبارہ زائرین بڑی تعداد میں جمع ہوگئے۔

کشیدہ صورتحال کا ڈی آئی جی حیدر آباد شرجیل کھرل نے نوٹس لیتے ہوئے ضلع جامشورو اور ضلع دادو سے اضافی پولیس نفری کو ہنگامی بنیادوں پر سیہون طلب کر لیا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں